’’اللہ کے فضل وکرم سے یہ سال کا پہلا ٹرین حادثہ ہے‘‘فردوس عاشق اعوان‎

وزیراعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ جب سے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آئی ہے اس سال کا پہلا ٹرین حادثہ ہے ۔ تفصیلات کے مطابق میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئےوزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کی معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ جب سے پی ٹی آئی کی حکومت اقتدار میں آئی ہے

’’ اللہ کے فضل کرم سےیہ اس سال کا پہلا ٹرین حادثہ ہے‘‘ ۔ وزیراعلیٰ پنجاب کی معاون خصوصی کے اس بیان کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے ملے جلے ردعمل کا اظہار کیا ہے۔دوسری جانب سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کی واضح ہدایات کے مطابق ریلوے ٹریکس کی اپ گریڈیشن اور نظام میں موجود خامیاں دور کرتے ہوئے عوام کی قیمتی جانوں کو محفوظ بنانے کے ساتھ ساتھ ریل کا سفر محفوظ تر بنانے کیلئے حکمت عملی مرتب کی جارہی ہے۔ تاکہ مستقبل میں ایسے واقعات سے بچا جا سکے۔فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ گذشتہ کئی سالوں میں پے در پے پیش آنے والے ٹرین حادثات کی نسبت رواں برس اس نوعیت کے خوفناک حادثات میں نمایاں کمی آئی ہے۔ گذشتہ 15ماہ میں یہ پہلا بڑا ٹرین حادثہ ہے۔ اس تناظر میں دئیے گئے میرے ایک بیان کو سیاق و سباق سے ہٹ کر توڑ موڑ کر پیش کیا جارہا ہے۔قبل ازیں معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ جس میں سے 21 زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈسچارج کیا جاچکا ہے۔ جبکہ 03 زخمی THQ صادق آباد میں زیرعلاج ہیں۔ وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کی جانب سے ہسپتال انتظامیہ، ڈاکٹرز اور نرسز کو ترجیحی بنیاد پر ٹرین حادثے کے زخمیوں کی دیکھ بھال کی ہدایت کی گئی ہے۔گھوٹکی سندھ میں پیش آئے ٹرین حادثے کے زخمیوں کو پنجاب کے ہسپتالوں میں ترجیحی بنیادوں پر علاج معالجے کی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ اب تک 72 زخمیوں کو پنجاب کے ہسپتالوں میں لایا گیا۔ THQ صادق آباد 10، شیخ زید ہسپتال رحیم یار خان 37، ریسکیو 1122 نے 24 زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں