امریکہ، چین،کینیڈا،نیپال، مصر اور سری لنکانے پاکستان سے آم کا تحفہ قبول کرنے سے انکار کردیا ،وجہ کیا بنی؟پتہ چل گیا

محکمہ وزارت خارجہ دنیا کے 32ممالک کے سربراہوں کو اعلیٰ معیار کے آم بھجوا رہا ہے،آم کے یہ تحفے صدر پاکستان کی جانب سے بھجوائے جارہے ہیں۔امریکا، چین سمیت کچھ دیگر ممالک نے کورونا

کی وجہ سے آم کا تحفہ قبول کرنے سے انکار کردیا ہے ،پاکستان سے کہا ہے کہ وہ تحفہ نہ بھیجے ،روزنامہ جنگ میں محمد صالح ظافر کی شائع خبر کے مطابق اس برس ’چونسا‘ قسم کے آم کا انتخاب کیا گیا ہے جبکہ گزشتہ سال انور رٹول اور سندھڑی منتخب کئے گئے تھے،زرائع کے مطابق آم کے تحفے کےلئے فرانس کو بھی منتخب کیا گیا ہے تاہم پیرس نے ابھی تک جواب نہیں دیا،زرائع نے بتایا ہے کہ آم کی پیٹیاں ایران، خلیجی ممالک،ترکی، برطانیہ، افغانستان بنگلادیش اور روس کوبھی بھیجے جائیں گے۔ جن ممالک نے تحفہ قبول کرنے سے معزرت کی ہے ان میں کینیڈا،نیپال، مصر، اور سری لنکا شامل ہیں۔یہاں یہ بات قابل زکر ہے کہ اسلام آباد میں بھی مینگو ڈپلومیسی عروج پر ہے اور غیر ملکی سفارتکاروں اعلیٰ سرکاری افسران سمیت دیگر ممتاز شخصیات کو آم کی پیٹیاں بھیجی جارہی ہیں۔ مینگو ڈپلومیسی کے بانی مرحوم نوابزادہ نصراللہ خان اور پیر آف پگارا تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں