قاچولی بہادر کون تھا؟ چنگیز خان کے بارے میں کس نے خواب دیکھا تھا؟ تموچین اور چنگیز خان کی حقیقت کیا ہے؟

منگولوں کی تاریخ سے دنیا کا بچہ بچہ واقف ہے، ہر کوئی یہ جانتا ہے کہ کس طرح انہوں نے مسلمانوں کے کشتوں کے پشتے لگائے اور ظلم و جبر کی وہ داستانیں رقم کیں جن کی تاریخ میں نظیر نہیں ملتی، آج کی اس ویڈیو میں ہم منگولوں کے پہلے بادشاہ چنگیز خان کا ذکر کریں گے لیکن اس سے پہلے چند بنیادی باتیں سمجھنا ضروری ہیں۔

منگولوں کا ملک چھ صوبوں یا حصوں میں منقسم تھا جس کے ہر حصے پر ایک سردار حکمران تھا۔ یہ تمام 6 حکمران ایک بادشاہ کے ماتحت سمجھے جاتے تھے۔ جو ’طمغ آچ‘ میں رہتا تھا۔ ان چھ صوبوں میں سے ایک صوبہ کی حکومت بوزنجر ابن الانقوا کے خاندان کے پاس تھی ۔ یہاں تک کہ تومنہ خان تک حکمرانی پہنچی تو اس کے گیارہ بیٹے پیدا ہوئے۔ اس کے ایک بیوی میں سے 9 اور دوسری بیوی میں سے دو بیٹے پیدا ہوئے جن کے نام اس نے قبل خان اور قاچولی بہادر رکھے۔

ایک رات قاچولی بہادر نے خواب میں دیکھا کہ اس کے بھائی قبل خان کے گریبان سے ایک ستارہ نکل کر آسمان پر پہنچا اور اپنی روشنی زمین پر ڈالنے لگا۔ تھوڑی دیر کے بعد وہ ستارہ غائب ہوا اور اس کی جگہ دوسرا ستارہ پیدا ہو گیا۔ تھوڑی دیر کے بعد وہ ستارہ غائب ہوا اور اس جگہ تیسرا ستارہ پیدا ہوا۔ اس تیسرے کے غائب ہونے پر جو چوتھا ستارہ نمودار ہوا۔ اس قدر بڑا اور تیز روشنی والا تھا کہ تمام جہان اس کی روشنی سے منور ہوگیا۔ اس بڑے اور روشن تر ستارے کے غائب ہونے پر کئی چھوٹے چھوٹے روشن ستارے آسمان پر نمودار ہوئے۔ اس کے بعد قاچولی بہادر کی آنکھ کھل گئی۔

 وہ ابھی اس خواب کی تعبیر کے متعلق غور و فکر میں مصروف تھا کہ اس کو پھر نیند آ گئی اب کی مرتبہ اس نے خواب میں دیکھا کہ خود اس کے گریبان سے ایک ستارہ نکلا اور آسمان پر چمکنے لگا۔ اس کے بعد دوسرا اس کے بعد تیسرا۔ غرض یکے بعد دیگرے سات ستارے نمودار ہوئے ساتویں ستارے کے بعد ایک بہت بڑا اور نہایت روشن ستارہ نمودار ہوا۔ جس کی روشنی سے تمام جہان منور ہو گیا۔ اس بڑے اور روشن ستارے کے غائب ہونے پر کئی چھوٹے چھوٹے ستارے پیدا ہوئے اس کے بعد قاچولی بہادر کی آنکھ کھل گئی۔ اس نے اپنے یہ دونوں خواب اپنے باپ تومنہ خان سے بیان کیے۔ تومنہ خان نے خواب سن کر کہا کہ۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں