پاکستان کو افغانستان کے اندرونی معاملات سے دور رہنا چاہئیے،جب انتخابات کا اعلان ہوگا تو ن لیگ اپنے امیدواروں کے نام بتائے گی۔نائب صدر ن لیگ مریم نواز کی میڈیا سے گفتگو

پارٹی شہباز شریف کو وزیراعظم نامزد کرتی ہے تو حمایت کریں گے

پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا ہے کہ اگر پارٹی شہباز شریف کو وزیراعظم نامزد کرتی ہے تو حمایت کریں گے۔انہوں نے عدالت پیشی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے عوام مشکل میں ہیں۔ پاکستان میں تبدیلی ضرور آئے گی لیکن جھوٹی اور جعلی تبدیلی سے پاکستان کی جان چھوٹے گی۔
انہوں نے کہا کہ میں نے عدالت سے حقائق سامنے لانے کے لیے وقت مانگا ہے، عدالت اور قوم کے سامنے حقائق آنے چاہیے کہ میرے خلاف کیسز کیسے بنے۔یہ کیس میرے خلاف انتقام پر مبنی ہے۔مریم نواز نے پیپلزپارٹی سے متعلق پوچھے جانے والے سوالات پر کہا کہ میں پیپلزپارٹی اور چوہدری نثار سے متعلق بیان پر تبصرہ نہیں کرنا چاہتی۔

مزید کہا کہ پاکستان کو افغانستان کے اندرونی معاملات سے دور رہنا چاہیے اور اگر نمائندہ حکومت نہ ہو تو عوام مسترد کر دیتے ہیں، انہوں نے کہا کہ افغانستان ایک آزاد ملک ہے اس لیے ہمیں ان کے داخلی امور میں مداخلت نہیں کرنا چاہیے۔

انہوں نے زور دیا کہ ہمیں عالمی برادری کے ساتھ مل کر متاثرہ افغان خاندانوں کی بحالی میں تعاون کرنا چاہیے اور پاکستان کو ان کے اندورنی معاملات سے دور رہنا چاہیے۔۔ مریم نواز نے کہا کہ شہباز شریف کو اگر پارٹی وزیراعظم نامزد کرتی ہے تو ہم سپورٹ کریں گے ،جب انتخابات کا اعلان ہوگا تو ن لیگ اپنے امیدواروں کے نام بتائے گی۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ آئندہ انتخابات کے لیے نامزد امیدوار سے متعلق پارٹی کے صدر شہباز شریف جو فیصلہ کریں گے ہم سب ان کے ساتھ اتفاق کریں گے اور حکومت کب تک اپنے سیاسی مخالف کو نااہل کراتے جائیں گے۔
مریم نواز نے کہا کہ جیسے جیسے حکومت کے دن پورا ختم ہوتے جارہے ہیں، ان کی انتقام پرمبنی سیاست بھی بڑھتی جارہی ہے۔صحافی نے سوال کیاکہ چوہدری نثار کے مطابق پیپلز پارٹی اچھی سیاست کررہی ہے جس پر مریم نواز نے جواب دیاکہ میں اس بات پر کوئی کمنٹ نہیں کرنا چاہتی،میں اس بات کو کمنٹ کے بھی قابل نہیں سمجھتی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں