قومی ائیرلائن نے لیز پر دو جدید ائیربس مسافر طیاروں کے حصول کے معاہدے کے تحت ایک جہاز حاصل کر لیا

پی آئی اے میں جدید مسافر طیاروں کی شمولیت شروع، قومی ائیرلائن نے لیز پر دو جدید ائیربس مسافر طیاروں کے حصول کے معاہدے کے تحت ایک جہاز حاصل کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق پی آئی اے نے مشکل حالات سے نکلنے کیلئے مختلف اقدامات اٹھانے کا سلسلہ شروع کیا ہے۔ اس سلسلے میں قومی ائیرلائن نے اپنے بیڑے میں ایک نیا اور جدید مسافر طیارہ شامل کیا ہے۔
پی آئی اے کے فضائی بیڑے میں شامل ہونے والا نیا ایئر بس مسافر طیارہ اسلام آباد پہنچ گیا۔

بتایا گیا ہے کہ پی آئی اے نے ٹینڈر کے ذریعے 2 مسافر طیارے حاصل کیے، دونوں طیارے 2017 ساخت کے ہیں۔ ایک ائیر بس طیارہ اسلام آباد پہنچ چکا جبکہ دوسرا طیارہ آئندہ چند روز تک پاکستان بھیج دیا جائے گا۔

مزید بتایا گیا ہے کہ کرونا اور عالمی ہوا بازی کے بحران کی وجہ سے گزشتہ 2 سال سے نئے مسافر طیارے حاصل نہیں کر سکا تھا، تاہم اب دنیا بھر میں فضائی سفر کے حوالے سے حالات بہتر ہونے کے بعد جلد 2 ائیربس مسافر طیارے پی آئی اے کے بیڑے میں شامل ہونے کے بعد آپریشنل ہو جائیں گے۔ ان طیاروں سے پی آئی اے اپنے مہمانوں کو بہتر اور آرام دہ سفری سہولیات مہیا کرے گا۔
اس پیش رفت پر ایئر مارشل ارشد ملک نے بھی ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ نئے طیاروں کا حصول اللّٰہ کی مہربانی اور میری ٹیم کی کاوشوں سے عمل میں آیا ہے، یہ اللّٰہ کا خاص کرم اور میری ٹیم کی شب و روز کی محنت کا ثمر ہے۔ واضح رہے کہ کرونا بحران کے دوران پی آئی اے سمیت ملک کی نجی ائیرلائنز شدید نقصانات سے دوچار ہوئیں۔ ان نقصانات کم کرنے کیلئے پی آئی اے مسلسل کوشاں ہے۔


قومی ائیرلائن کی جانب سے گزشتہ ایک سال کے دوران کئی مقامی روٹس پر پروازوں کا آغاز کیا گیا۔ پی آئی اے کی حالت میں بہتری لانے کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ قومی ائیرلائن کو چیلنجز کا سامنا ہے لیکن اس کے باوجود ایئر لائن کی معاشی صورت حال بہتر بنانے کے لیے مختلف غیر ملکی سیکٹرز پر پروازوں کا آغاز اور تعداد میں اضافہ کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ پی آئی اے عالمی ماہرین پر مشتمل بزنس پلان تیار کر رہی ہے جس سے پی آئی اے کو دنیا بھر میں کامیابی حاصل ہوگی۔
ری اسٹرکچرنگ میں جدت اور ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جائے گا۔ مزید بتایا گیا ہے کہ کرونا بحران کے باوجود ایک سال میں قومی ائیرلائن کے خسارے میں 18 ارب روپے کی زبردست کمی ہوئی، پی آئی اے کا خسارہ 52.6 ارب روپے سے کم ہو کر 34.64 ارب روپے رہ گیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں