25ارب روپے شہباز شریف کے ملازمین کے اکائونٹس میں چھپائے گئے،تہلکہ خیز انکشاف

وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ماضی میں پاکستان اور عوام کے ساتھ ظلم کیا گیا،25ارب روپے شہباز شریف کے ملازمین کے اکائونٹس میں چھپائے گئے، ن لیگ نے سڑکوں کے نام پر بہت بڑی کرپشن کی ،جب قرضوں کی واپسی کیلئے قرضے لیے جاتے ہیں تو ملک کی خودمختاری متاثر ہوتی ہے،
آصف علی زرداری اور نواز شریف نے 2008سے 2018تک اس قرضے کو 27 ٹریلین تک پہنچا دیا،موجودہ حکومت نے 10ارب ڈالر کے قرضے واپس کیے۔ان خیالات کا اظہار وفاقی وزرا چوہدری فواد حسین نے مراد سعید کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے

کیا ۔فواد چوہدری نے کہاکہ عمران خان اس کرپشن کے خلاف تھے جو سڑکوں کے نام پر کی گئی،ن لیگ نے شاہراہوں کی تعمیر پر بہت زیادہ کرپشن کی،جب لاہور اسلام آبادموٹروے بنائی جا رہی تھی اس وقت لندن میں ایون فیلڈ اپارٹمنٹ خریدے گئے،شریف خاندان نے شاہراہوں کی تعمیر کو اپنا کاروبار کا ذریعہ بنایا۔انہوں نے کہاکہ موجودہ حکومت نے 10ارب ڈالر کے قرضے واپس کیے،25ارب روپے شہباز شریف کے ملازمین کے اکائونٹس میں چھپائے گئے،جب قرضوں کی واپسی کیلئے قرضے لیے جاتے ہیں تو ملک کی خودمختاری متاثر ہوتی ہے،ماضی میں پاکستان اور عوام کے ساتھ ظلم کیا گیا۔وفاقی وزیر اطلاعات نے کہاکہ آج ملک میں مہنگائی اور کمزور معیشت کی بنیادی وجہ سابقہ ادوار کی لوٹ مار اور کرپشن ہے، سابقہ ادوار میں کرپشن کو قانونی طریقے سے تحفظ فراہم کیا گیا، عمران خان ہمیشہ سے کہتے رہے ہیں کہ ہمارا مقابلہ ایک مافیا سے ہے، 4 دسمبر 2002کو ڈان اخبار میں ایک خبر شائع ہوئی جس میں کہا گیا کہ اسلام آباد موٹر وے کی لاگت 60 ارب ڈالر سے تجاوز کر گئی ہے


وفاقی وزیر اطلاعات نے کہاکہ موٹر وے کی کل آمدن 45 کروڑ روپے ہے جبکہ ہم نے 60 ارب ڈالر کی یہ موٹر وے بنائی، عمران خان سڑکوں کے خلاف نہیں، وہ کرپشن کے خلاف ہیں جو سڑکوں کے نام پر کی جاتی ہے، جب لاہور ۔ اسلام آباد موٹر وے کا معاہدہ ہو رہا تھا، اسی وقت لندن میں ایون فیلڈ اپارٹمنٹس خریدے جا رہے تھے۔ ن لیگ
نے سڑکوں کے نام پر بہت بڑی کرپشن کی، بدقسمتی سے لوٹ مار کے ذریعے حاصل کیا جانے والا پیسہ ملک میں بھی نہیں لگایا، یہ بیرون ملک منتقل کیا گیا،موٹر وے پر ڈائیو کمپنی کو صرف دو ارب ڈالر ہم نے سود کی مد میں ادا کئے، موٹر وے ضرور بننی چاہئے، سڑکوں کے بغیر ترقی کا تصور ہی نہیں،وفاقی وزیر اطلاعات نے کہاکہ ن
لیگ نے سڑکوں کی آڑ میں کرپشن کا کاروبار شروع کیا جس کی وجہ سے ملکی معیشت کمزور ہوئی، جب ملک میں وزیراعظم اور کابینہ کے اراکین مل کر کرپشن کریں گے تو پھر قومیں تباہ ہوتی ہیں، وفاقی وزیر اطلاعات نے کہاکہ1947سے 2008تک 65 سالوں میں پاکستان کا قرضہ 6 ٹریلین تھا،آصف علی زرداری اور نواز شریف نے


2008سے 2018تک اس قرضے کو 27 ٹریلین تک پہنچا دیا، چوہدری فواد حسین نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے تین سالوں میں 10 ارب ڈالر قرضہ واپس کیا، ہم جب بھی سابقہ ادوار کے بجلی، سڑکوں یا ترقی کے منصوبے دیکھتے ہیں تو کرپشن کا ایک پہاڑ سامنے آتا ہے، چوہدری فواد حسین نے کہاکہ شریف فیملی
اور زرداری فیملی نے پاکستان سے لوٹی گئی دولت بیرون ملک منتقل کی، وفاقی وزیر اطلاعات نے کہاکہ شہباز شریف پر 25 ارب روپے کرپشن کا مقدمہ ہے، یہ رقم شہباز شریف کے ملازمین کے اکانٹس سے انہیں منتقل کی گئی، یہ وہ مقدمات ہیں جن میں لوٹی ہوئی رقوم کا ہمیں علم ہے، اس کے علاوہ لوٹی گئی رقوم کا ہمیں پتہ ہی نہیں، جب ہم قرضے واپس کرنے کیلئے مزید قرض لیتے ہیں تو اس سے ملک کی خودمختاری متاثر ہوتی ہے، سابقہ دور میں پاکستان کے ساتھ بہت ظلم کیا گیا، پاکستان کے عوام کا خون نچوڑا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں