وزیراعظم عمران خان نے پنڈورا پیپرزمیں شامل پاکستانیوں سے تحقیقات کا اعلان کر دیا

وزیر اعظم عمران خان نے بڑے مالیاتی اسکینڈل پینڈورا پیپرز کا غیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ میری حکومت پینڈورا پیپرز میں سامنے آنے والے تمام شہریوں کی تحقیقات کرے گا،، کسی بھی پاکستانی شہری کی کرپشن ثابت ہوئی تو تادیبی کارروائی کریں گے۔
اپنے بیان میں وزیراعظم عمران خان نے ’پنڈوراپیپرز‘ کا خیرمقدم کرتے ہوئے اعلان کیا کہ حکومت پنڈورا پیپرز میں آنے والے تمام پاکستانیوں کی تحقیقات کر کے ان کے خلاف ایکشن لے گی۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پنڈوراپیپرز کی تحقیقات کا خیرمقدم کرتے ہیں اشرافیہ نے ٹیکس چوری، کرپشن سے ناجائزدولت

بنائی، اشرافیہ نیناجائزدھن کومالیاتی محفوظ پناہ گاہوں میں منتقل کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ فیکٹی کے مطابق تقریباً7ٹریلین ڈالرمحفوظ پناہ گاہوں میں رکھے گئے جس میں زیادہ تر آف شور کمپنیوں کے ذریعے منتقل کیے گئے پنڈوراپیپرز میں اشرافیہ کی ناجائزدولت بے نقاب کردی ہے۔

ٹوئٹ میں وزیراعظم نے لکھا کہ ایسٹ انڈیا کمپنی نے ہندوستان کی دولت لوٹی تھی ایسے ہی حکمران طبقے نے اپنے ملکوں کی دولت لوٹی، غریب ملکوں کاپیسہ روکنے کیلئے امیرملک کچھ نہیں کرتے امیرملکوں کے پاس جو غریب ممالک کا پیسہ ہے واپس بھی نہیں کرتے۔وزیراعظم نے کہا کہ 20سال کی جدوجہداسی یقین پرہے کہ کرپشن سے کئی ممالک غریب ہیں، غریب ممالک کے عوام پرپیسہ خرچ ہونے کے بجائے آف شور میں جاتاہے کرپشن کی وجہ سے غریب ملکوں کی کرنسی بے قدر ہو چکی ہے غربت کی وجہ سے غریب ممالک میں ہزاروں لوگ ناحق جان سے جاتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں