کار سوار لڑکی سے نازیبا حرکات کا الزام، ایس ایچ او سمیت 5 اہلکار برطرف

فیصل آباد:کار سوار لڑکی سے نازیبا حرکات کا الزام، ایس ایچ او سمیت 5 ..

کار سوار لڑکا اور لڑکی کو تلاشی کے بہانے تھانے لے جا کر بدسلوکی اور لڑکی سے نازیبا حرکات کرنے کا واقعہ، ایس ایچ او اور تفتیشی سب انسپکٹر سمیت 5 اہلکاروں کو نوکری سے برطرف کردیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق فیصل آباد میں کار سوار لڑکا اور لڑکی کو تلاشی کے بہانے تھانے لے جا کر بدسلوکی اور لڑکی سے نازیبا حرکات کرنے کے واقعے میں ملوث ایس ایچ او اور تفتیشی سب انسپکٹر سمیت 5 اہلکاروں کو نوکری سے برطرف کردیا گیا۔
سی پی او عابد خان کے مطابق 8 ستمبر کو کینال روڈ پر کار سوار لڑکا اور لڑکی کو روک کر ان سے بدسلوکی کرنے کے الزام میں تھانہ منصور آباد میں مقدمہ درج کر کے انکوائری کی گئی۔انکوائری رپورٹ کے مطابق تین پولیس اہلکاروں نے کار سوار کزن لڑکا اور لڑکی کو تلاشی کے بہانے 2 گھنٹے تک روکا اور لڑکی سے نازیبا حرکات کیں اور نقدی بھی چھین لی تھی۔

قصور وار پائے جانے پر تھانہ منصور آباد کے ایس ایچ او اشفاق باجوہ، کانسٹیبلان منان، آصف اور علی رضا کو جب کہ ملزمان کو جیل نہ بھیجنے پر تفتیشی افسر کو ملازمت سے برخاست کردیا گیا ہے۔

سی پی او کے مطابق ان کے علاوہ انچارج انویسٹی گیشن اور اے ایس آئی کی عہدوں سے تنزلی اور محرر حمید سمیت ایک اور اے ایس آئی کی تنخواہ میں دو درجے تنزلی کی گئی ہے ۔ دوسریجانب کار سوار لڑکے کی مدعیت میں درج ایف آئی آر کے مطابق وہ اپنی کزن کے ساتھ شادی کی تقریب سے واپس گھر جا رہا تھا کہ راستے میں پولیس اہلکاروں نے ان کی گاڑی کو تلاشی کے بہانے روکا۔ایف آئی آر کے مطابق پولیس اہلکاروں نے 2 گھنٹے تک روکے رکھا اور ایک پولیس اہلکار نے اس کی کزن کے ساتھ نازیبا حرکات بھی کیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں