فی کلو قیمت 440 روپے، مرغی کا گوشت غریبوں کی پہنچ سے دور ہو گیا

فی کلو قیمت 440 روپے، مرغی کا گوشت غریبوں کی پہنچ سے دور ہو گیا

چکن کی قیمتوں میں اضافے کا رجحان برقرر،برائلر گوشت غریب عوام کی پہنچ سے باہر ہو گیا۔ چکن کی قیمتوں میں آئے روز اضافے سے شہری پریشان۔ برائلر مرغی کو کھانے میں شامل کرنا شہریوں کو خواب لگنے لگا۔ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتی ہوئی قیمتوں نے غریب عوام کے اوسان خطا کر دئیے۔مہنگائی نے جہاں غریب شہریوں کو پریشانی میں مبتلا کر رکھا ہے وہیں متوسط طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد کوبھی چکن خریدنے سے پہلے سوچنے پر مجبور کر دیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق کراچی میں 3 روز کے دوران مرغی کا گوشت 350 روپے سے 440 روپے کا فی کلو ہوگیا، زندہ مرغی کی فی ک کلو قیمت میں 30 روپے کا اضافہ کر دیا گیا۔کوئٹہ میں مرغی کا گوشت 350 روپے سے بڑھ کر 380 روپے کا کلو ہو گیا، زندہ مرغی کی فی کلو قیمت بھی 250 سے بڑھ کر290 روپے ہوگئی ہے۔

لاہور میں چند ماہ قبل 150 سے 200 روپے کے درمیان ملنے والا چکن ٹرپل سینچری بھی عبور کر گیا۔

یکم ستمبر سے آج تک چکن کی فی کلو قیمت میں 88 روپے کا اضافہ ہوا۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز کی نسبت برائلر مرغی کے گوشت کی فی کلو قیمت میں 21 روپے کا اضافہ ہوا جس کےبعد نئی قیمت 328 سے 349 روپے مقرر کی گئی۔زندہ مرغی کی قیمت ایک ماہ کے اندر 61 روپے اضافے سے 241 روپے فی کلو تک جا پہنچی۔ گزشتہ ہفتے یہی چکن مارکیٹ میں سرکاری نرخ نامہ کے مطابق 302 روپے میں فی کلو میں دستیاب تھا۔
جو آج 349 روپے میں بکتا رہا۔ واضح رہے کہ ماہ صیام میں برائلر مرغی نے ایسی اڑان بھری کہ ملک کے مختلف شہروں میں چکن 500 سے 600 روپے فی کلو تک پہنچ گیا۔عید الاضحیٰ کے موقع پر قربانی کا گوشت وافر ہوا اور برائلر گوشت کی مانگ میں کمی ہوئی تو پولٹری فارمرز کو بی قیمتیں کم کرنا پڑی اس طرح چند روز قیمتوں میں مسلسل کمی دیکھنے کو آئی۔لیکن یہ خوشخبری شہریوں کے لئے زیادہ دیر برقرار نہ رہ سکی اور چند روز بعد ہی قیمتوں نے ایک مرتبہ پھراونچی اڑان شروع کر دی جس سے چکن غریب عوام کی جیب پر بوجھ بننے لگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں