آپ شادی کی تیاریاں کریں میں آجاؤں گا۔۔ جانیے ان 3 شہیدوں کی رلا دینے والی کہانیاں جن کے گھر ویران ہوگئے

اکستان آرمی دنیا کی واحد آرمی ہے جو بیک وقت اندرونی اوربیرونی دشمنوں سے لڑ رہی ہے۔ ایسے میں پاکستان آرمی کے بے شمار جوانوں نے اپنی جان کا نظرانہ پیش کرتے ہوئے جام شہادت نوش کیا ہے۔

لیکن ان سب میں کچھ ایسے بھی شہید جوان ہیں جن کے سر سہرا سجنے والا تھا، تو کوئی باپ بنا تھا۔وطن کی خاطر ان جوانوں نے اپنی خوشیوں کووطن پر قربان کر دیا۔

ایسے ہی چند جوانوں کے بارے میں آپ کو بتائیں گے۔ کیپٹن عفان مسعود خان بلوچستان کے ضلع پسنی میں آئی ای ڈی بلاسٹ کے نتیجے میں شہید ہو گئے ہیں جبکہ عفان ان جوانوں میں شامل ہیں جو کہ بہت ہی خوبصورت ہونے کے ساتھ ساتھ جوان بھی تھے۔

کیپٹن عفان دو ماہ پہلے ہیوالد بنے تھے، ان کے بیٹے کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہے۔ شہید فیض اللہ فرنٹئیر کور (ایف سی) کے جانباز جوان تھے۔

شہید فیض اللہ گلگت بلتستان میں شہید ہو گئے تھے۔ شہادت سے چند روز قبل فیض اللہ کی شادی طے پا گئی تھی، تیاریاں عروج پر تھیں، فیض اللہکی شادی کے کارڈ چھپ چکے تھے، مگر شہادت کی خبر نے شادی کے گھر میں افسردگی کا ماحول پیدا کر دیا تھا، اگرچہ فیض اللہ شہید ہوئے تھے، مگر جوان اولاد کا غم کسی بڑے صدمے سے کم نہیں تھا۔

کیپٹن روح اللہ کا شمار بھیپاکستان آرمی کے خوبصورت اور باصلاحیت جوانوں میں ہوتا ہے۔ کوئٹہ میں پولیس لائن پر دہشت گردوں کے خلاف آپریشن میں جام شہادت نوش کیا تھا۔ کیپٹن روح اللہکی دو ماہ بعد شادی ہونا تھی، مگرجام شہادت نے سب کچھ بدل کر رکھ دیا۔

ان جوانوں نے وطن کی خاطر اپنی خوشیوں کو قربان کر دیا تھا، مگر دہشت گردوں کو ان کے عزائم میں کامیاب نہیں ہونے دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں